Vinkmag ad

گوشت انڈے اور دودھ سے ہمیں کیا ملتا ہے؟

غذائی اجزاء انسانی جسم کے لئے ایندھن کی طرح کام کرتے ہیں۔ یہ ہمیں توانائی فراہم کرتے،خلیوں کی نشوونما اور مرمت میں مدد دیتے اور جسم میں ہونے والے کیمیائی عمل کو کنٹرول کرتے ہیں۔ وٹامن بی 12 بھی ایسا ہی ایک جزو ہے جو عصبی خلیوں اور خون کے

سرخ خلیوں کو صحت مند رکھتا ہے ۔یہ مچھلی، مرغی،بڑے یا چھوٹے گوشت، انڈے، دودھ، دہی، پنیر اور دیگر ڈیری مصنوعات سے حاصل کیا جاسکتا ہے ۔اس کے علاوہ  سیریل، ڈبل روٹی، خمیر یا ایسی دیگر اشیاء جن میں مصنوعی طور پر یہ وٹامن شامل کیا گیا ہو وہ بھی اس کے ذرائع ہیں۔

کمی کی وجہ کیا

اگر جسم میں اس وٹامن کی مناسب مقدار ہی داخل نہ ہو یا وہ استعمال نہ ہورہی ہو تو اس کی کمی ہوجاتی ہے۔ اس کا سبب بننے والے عوامل یہ ہیں:

٭وٹامن بی 12کی حامل خوراک نہ کھانا۔

٭ایسی کیفیت کا شکار ہونا جس میں جسم کا مدافعتی نظام معدے کے خلیوں پر حملہ آور ہوجاتا ہے۔ نتیجتاً وٹامن بی 12 جذب ہونے کے لئے ضروری پروٹین نہیں بن پاتا۔

٭معدے کی سرجری کے عمل سے گزرنا جس میں آنتوں یا معدے کا کچھ حصہ نکال دیا گیا ہو۔

٭ایسی بیماریوں کا شکار ہونا (مثلاً کروہن یا سیلئک ڈیزیز) یا ایسی عادات (الکوحل استعمال کرنا) اپنانا جو نظام انہضام کو متاثر کریں۔

٭بد ہضمی یا تیزابیت وغیرہ کو دور کرنے والی ادویات استعمال کرنا۔

وٹامن بی 12 کی کمی کی علامات

اس کی علامات آہستہ آہستہ سامنے آتی ہیں اور شروع میں ہلکی پھلکی ہوتی ہیں‘تاہم علاج نہ ہو تو بگڑ سکتی ہیں۔

عمومی علامات

ان میں تھکاوٹ،کمزوری، متلی، قے، ڈائریا، بھوک نہ لگنا، وزن گرنا، منہ یا زبان پر چھالے بننا اور جلد کی رنگت زرد ہونا شامل ہیں۔

اعصابی خرابی کی علامات

ہاتھ، پاؤں سن ہونا یا ان میں سوئیاں چبھتی محسوس ہونا، یادداشت کمزور ہونا اور الجھاؤ کا شکار ہونا، بصارت کے مسائل، معمول کی طرح چلنے اور بولنے میں دقت ہونا اس کی علامات ہیں۔ ان کے ٹھیک ہونے کے امکانات کم ہوتے ہیں۔ اس کے علاوہ فرد ڈپریشن اور چڑچڑے پن کا شکار ہوسکتا ہے۔ اس کے رویے میں بھی تبدیلی آسکتی ہے۔

پیچیدگیاں

بروقت تشخیص اور علاج سے اس کمی کے اثرات پر قابو پایا جاسکتا ہے۔ دوسری صورت میں فالج ہوسکتا ہے۔ مریض کو پیشاب اور پاخانے پر قابو نہ رہنے، یادداشت کھونے اور ڈپریشن کی شکایت ہوسکتی ہے۔

اس کے باعث دماغ اور حرام مغز کے گرد اعصاب کو نقصان پہنچ سکتا ہے اور حرام مغز کی ساخت اور کارکردگی متاثر ہوسکتی ہے۔

وٹامن بی 12 کی کمی سے کیسے بچیں

یہ ہدایات اس سے بچنے اور اگر یہ کمی ہوجائے تو اسے پورا کرنے میں مددگار ثابت ہوسکتی ہیں:

٭اس وٹامن کے حامل اشیائے خوردونوش استعمال کریں۔

٭سبزی خور اگر گوشت کے ساتھ ساتھ انڈوں اور دودھ وغیرہ سے بھی پرہیز کرتے ہیں تو کھانے کے ان آپشنز کا انتخاب کریں جن میں یہ وٹامن مصنوعی طور پرشامل کیا گیاہو۔

٭ڈاکٹر کے مشورے سے وٹامن بی 12کے سپلی منٹس کھائیں۔

٭الکوحل استعمال کرنے سے گریز کریں۔

٭نظام انہضام کو متاثر کرنے والی بیماریوں کا شکار ہوں تو ڈاکٹر کی ہدایات پر عمل کریں تاکہ اس مسئلے سے بھی محفوظ رہ سکیں۔

اگرچہ زیادہ تر صورتوں میں یہ کمی اور اس کے اثرات کھانے پینے کی عادات میں تبدیلی اور سپلی منٹس سے دور ہوجاتے ہیں تاہم کبھی کبھار ایسا نہیں ہوپاتا۔ ایسے میں فرد طویل المعیاد مسائل کا شکار ہوجاتا ہے اور اسے زندگی بھر ادویات استعمال کرنا ہوتی ہیں۔ اس سے بچاؤ کا طریقہ نہایت ہی آسان ہے ،اس لئے کوشش کریں کہ  معمولی احتیاطوں سے خود کوپہلے ہی محفوظ رکھیں۔

itamin B 12 deficiency, what are the symptoms of vitamin B 12 deficiency, vitamin B 12 kahan say milta hai, vitamin B 12 ki kami say kya nuqsan hoga

Vinkmag ad

Read Previous

قے کی سائنس

Read Next

 غذا بزرگوں کی  ذہنی صحت پر کیسے اثر کرتی ہے؟  

Leave a Reply

Most Popular