Vinkmag ad

ہوش و حواس میں گردے کی پہلی پیوند کاری

گردے کی پیوندکاری سے پہلے مریض کو بے ہوش کیا جاتا ہے۔ لیکن ایک مریض ایسا بھی ہے جس کی پیو ندکاری بیداری کی حالت میں کی گئی ہے۔ یہ طب کی تاریخ میں ہوش و حواس میں گردے کی پہلی پیوند کاری ہے۔ سرجری امریکی ریاست شکاگو میں ہوئی۔ اس دوران 28 سالہ مریض جان نکولس پورا آپریشن اپنی آنکھوں سے دیکھتے رہے۔۔

جان نکولس کے مطابق اپنی آنکھوں سے اپنا آپریشن دیکھنا ایک عمدہ تجربہ تھا۔ اس دوران انہیں درد محسوس نہیں ہوا۔ سرجری کے 24 گھنٹوں کے بعد انہیں ہسپتال سے ڈسچارچ  کر دیا گیا۔

ماہرین کے مطابق ہوش و حَواس میں گردے کی پیوند کاری کئی حوالوں سے مفید ہو گی۔ اس سے ہسپتال میں قیام کا دورانیہ ایک یفتے سے کم ہو کر دو سے تین دن رہ جائے گا۔

ٹرانسپلانٹ سرجن ڈاکٹر ستیش نادیگ کے مطابق اس کے لیے لوکل اینستھیزیا دیا جاتا ہے۔ یہ بالکل اسی طرح ہے جیسے سی سیکشن کے دوران حاملہ خواتین کو دیا جاتا ہے۔

Vinkmag ad

Read Previous

صحت عامہ: سٹیک ہولڈرز کا زیادہ فنڈز کا مطالبہ

Read Next

How to be happy in life?

Leave a Reply

Most Popular