Vinkmag ad

مرگی سے بچاؤ کے لیے احتیاطیں

مرگی ایک اعصابی مرض ہے جو عموماً دماغ میں پیدائشی نقص یا گردن توڑ بخارکی وجہ سے ہوتا ہے۔ اس کے نتیجے میں متاثرہ فرد کو دورے پڑتے ہیں۔ عالمی ادارۂ صحت کے مطابق دنیا بھر میں 50 ملین افراد اس کے شکار ہیں۔ ان میں سے 80 فی صد کا تعلق کم اور درمیانی آمدنی والے ممالک سے ہے۔ ذیل میں بتائی گئی احتیاطیں مرگی سے بچاؤ یا اس کے امکانات کو کم کرنے میں مؤثر ہو سکتی ہیں:

٭ مرگی سے بچاؤ کے لیے ضروری ہے کہ حمل کے دوران صحت کا معمول سے زیادہ خیال رکھیں۔

٭ زچگی کے لیے ایسی جگہ کا انتخاب کریں جہاں تربیت یافتہ عملہ موجود ہو۔

٭ اس کا سبب بننے والے امراض سے بچاؤ کے لیے دستیاب ویکسین لگوائیں۔

٭ موٹرسائیکل چلاتے ہوئے ہیلمٹ اور گاڑی چلاتے ہوئے سیٹ بیلٹ ضرور پہنیں۔ اس سے سر پرچوٹ کے امکانات کو کم کیا جا سکتا ہے۔

٭سیڑھیاں اترتے یا چڑھتے ہوئے محتاط رہیں۔

٭ سر پر چوٹ کی صورت میں اپنا معائنہ کروائیں کیونکہ اگر یہ چوٹ گہری ہو تو دماغ کو نقصان پہنچا سکتی ہے۔

٭متحرک طرز زندگی اختیار کریں اور صحت بخش غذا کھائیں تاکہ سٹروک، دل کے امراض اور نتیجتاً مرگی سے بچا جاسکے۔

٭ دنیا بھر میں مرگی کا سبب بننے والا عام انفیکشن (cysticercosis) ایک پیراسائٹ سے پھیلتا ہے۔ اس سے بچاؤ کے لیے ذاتی صفائی اور کھانا بنانے کے دوران حفظان صحت کے اصولوں کا خاص خیال رکھیں۔

٭ تمباکونوشی، الکوحل اور منشیات کے استعمال سے گریز کریں۔

٭نیند کا ایک وقت متعین کریں اور اس کی پابندی کریں۔ 

Vinkmag ad

Read Previous

راولپنڈی میں ہیپاٹائٹس نے خطرے کی گھنٹی بجا دی

Read Next

مرگی کا دورہ پڑنے پر مریض کی مدد کیسے کریں؟

Leave a Reply

Most Popular