مرگی کا دورہ‘ کیا کریں ؟

2

مرگی کا دورہ‘ کیا کریں ؟

مرگی کا دورہ عموماً کچھ سیکنڈزسے ایک یادو منٹ تک رہتا ہے۔ اگرایسے میں آپ مریض کے قریب ہوں تو مندرجہ ذیل اقدامات کریں

٭مریض کی گردن کے قریب کے کپڑوں (سکارف ‘ کالریا ٹائی وغیرہ) کو ڈھیلا کردیں۔ اس لئے کہ جھٹکے کھانے اورگردن مڑنے سے اس کی سانس نہ رکے۔

٭دورے کے وقت اگرمریض کا منہ بندہو توبعض لوگ اسے زبردستی کھولنے کی کوشش کرتے ہیں تاکہ اس کی زبان نہ کٹے۔ ایسا کرنا غلط ہے اوراس سے زیادہ نقصان ہوسکتا ہے۔

٭اس کے منہ میں زبردستی کوئی چیز ڈالنے کی کوشش نہ کریں۔

٭مریض اگر سڑک پر ہو تو اسے ایک طرف کر دیں اورکروٹ کے بل لٹادیں۔ ایسے اگراس کے منہ سے جھاگ وغیرہ نکلے یا وہ قے کرے تو وہ پھیپھڑوں میں نہیں جائے گی۔

٭اگرمریض کے پاس کوئی نوکدار چیز مثلاً پین یا عینک وغیرہ ہو تواسے ہٹا دیں تاکہ دورے کی حالت میں اسے چوٹ نہ لگے۔

٭دورہ ختم ہونے کے بعد اسے نارمل ہونے میں کچھ دیر لگتی ہے۔اس لئےمکمل طور پر ہوش و حواس میں واپس آنے تک مریض کو اکیلا نہ چھوڑیں۔

٭اگر مریض کو پانچ منٹ سے زیادہ کا دورہ پڑے یا اسے بار بار دورے پڑیں اوروہ ہوش میں نہ آرہا ہو تو اسے فوراً ہسپتال یا ڈاکٹر کے پاس لے جانے کی ضرورت ہوتی ہے۔

٭اگرمرگی کا دورہ حاملہ خاتون کوہوا ہو تودورے کے بعد اسے فوراً ہسپتال لے جانا چاہیے‘ اس لئے کہ حاملہ خاتون کے جسم کو جب جھٹکے لگتے ہیں تو اس کے حمل گرنے کا خدشہ ہوتا ہے۔

epilepsy attack, first aid , what to do

0 0 vote
Article Rating
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments
0
Would love your thoughts, please comment.x
()
x