کیلشیم اوروٹامن ڈی

کیلشیم اوروٹامن ڈی

خوراک کا ہڈیوں کی صحت کے ساتھ بڑا گہرا تعلق ہے۔  25سال کی عمرتک ہماری ہڈیاں مضبوط ہوتی ہیں۔ اس عمرمیں ہمیں خاص طورپر کیلشم اوروٹامن ڈی سے بھرپورخوراک ضرورکھانی چاہیے۔ اس خوراک میں دودھ، دہی، پنیر، انڈے اورمچھلی وغیرہ شامل ہیں۔ اگراس عرصے میں کیلشیم یا وٹامن ڈی کی کمی ہوتوپھرہڈیوں کی کمزوری کا مسئلہ عمربھرچلے گا۔ بالعموم 35سال کی عمرتک ہڈیاں مضبوطی کی ایک خاص سطح پررہتی ہیں جس کے بعد وہ کمزورہونے لگتی ہیں۔ خواتین میں جب ایام کا سلسلہ رک جاتا ہے تو ہارمونل تبدیلیوں اورکیلشیم کی کمی کے باعث ان کی ہڈیاں کمزورہونا شروع ہو جاتی ہیں۔

روزانہ کی مقدار

٭بچوں کے لیے وٹامن ڈی کے روزانہ200آئی یولینا ضروری ہیں۔ (آئی یو ایک پیمانہ ہے جس کے ذریعے حیاتیاتی سرگرمی کی پیمائش کی جاتی ہے)۔ اگر آدھا گھنٹہ ہلکی دھوپ میں رہا جائے تو یہ مقدار پوری ہو جاتی ہے۔ اسی طرح اگرایک گلاس دودھ، ایک ٹکڑا پنیریا ایک کپ دہی روزانہ کھا لیا جائے توکیلشیم کی مقدارپوری ہوجاتی ہے۔

٭٭بالغ افراد میں 1000 ملی گرام کیلشیم اور400آئی یو وٹامن ڈی کی ضرورت ہوتی ہے۔ بزرگوں کی ضروریات بھی یہی ہیں۔

٭بچوں کو دودھ پلانے والی خواتین کو روزانہ 1500 ملی گرام کیلشیم کی ضرورت ہوتی ہے۔

نوٹ: ضرورت سے زیادہ کیلشیم گردوں میں پتھری کے مریضوں کے لیے نقصان دہ ہے لہٰذا روزانہ کی ضرورت کے مطابق ہی کیلشیم لیں۔

daily calcium an vitamin intake for males, females, adults and kids

LEAVE YOUR COMMENTS