Vinkmag ad

تیز قدمی کے فوائد

مشہور یونانی معالج اور مفکر ہیپوکریٹس نے دو ہزار سال قبل پیدل چلنے کے بارے میں کہا تھا کہ یہ عمل انسان کے لیے بہترین دوا ہے۔اسی بات کا خلاصہ یونیورسٹی آف کیمبرج کی ایک تحقیق میں یوں بیان کیا گیا ہے کہ روزانہ 20 منٹ کی تیز قدمی قبل ازوقت موت کے خطرے کو ایک تہائی حد تک کم کرتی ہے۔  تیز قدمی کے فوائد یہ ہیں:

وزن میں کمی

وزن کم کرنے کے خواہش مند افراد دن میں کم از کم 60 منٹ ضرور تیز قدمی کریں۔ اس کے ساتھ اپنی خوراک کو بھی متوازن رکھیں۔ اگر کوئی شخص سمجھتا ہے کہ ورزش جاری رکھتے ہوئے وہ مرغن غذائیں بھی کھاتا رہے لیکن اس کا وزن نہ بڑھے تو ایسا ممکن نہیں۔ متوازن غذا اور مناسب ورزش سے کم وقت میں زیادہ فوائد حاصل کیے جا سکتے ہیں۔ یہاں تک کہ تین ماہ میں 5 سے 10 کلو تک وزن کم  کیا جا سکتا ہے۔

دل کی صحت

راولپنڈی کے ماہر امرض قلب ڈاکٹر اسد اسلام کے مطابق تیز پیدل چلنے سے دل کے پٹھے مضبوط اور دھڑکن تیز ہوتی ہے۔ اس طرح شریانوں میں خون کی گردش بھی بہتر ہوتی ہے جس سے میٹابولزم بھی ٹھیک ہوتا ہے۔ جو لوگ تیز قدمی نہیں کرتے، انہیں سب سے پہلے موٹاپا گھیرتا ہے۔ اس کے بعد شوگر، بلڈپریشر اور آخر میں دل کی بیماریاں لاحق ہو جاتی ہیں۔

موڈ پر مثبت اثر

اسلام آباد کی ماہر نفسیات ڈاکٹر سنعیہ اختر کہتی ہیں کہ ورزش سے دماغ میں کچھ کیمیکلز خارج ہوتے ہیں۔ انہیں انڈورفنز کہا جاتا ہے۔ ان کی وجہ سے موڈ بہتر ہوتا ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ تیز قدمی یا ورزش سے نیند بہتر ہوتی ہے اور ذہنی دباؤ میں کمی آتی ہے۔

تیز قدمی دماغی صحت اور ذہنی سکون کے لیے نہایت ضروری ہے۔ یہ عمل صبح کے وقت کیا جائے تو دوگنا فائدہ ہوتا ہے۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ صبح کی فضا گردوغبار سے پاک ہوتی ہے۔ صاف اور تازہ آکسیجن پھیپھڑوں میں جانے سے آنکھیں روشن، چہرہ سرخ اور پٹھے مضبوط ہوتے ہیں۔ اس سے سارا دن کام کرنے کے بعد بھی تھکاوٹ اور اکتاہٹ محسوس نہیں ہوتی۔weight loss

Vinkmag ad

Read Previous

آنکھوں کی خوبصورتی بڑھانے کے لیے ٹپس

Read Next

زچگی کے بعد ڈپریشن

Leave a Reply

Most Popular