گینگرین کی اقسام

5

گینگرین کی اقسام

گینگرین اس کیفیت کوکہتے ہیں جس میں جسم کے کسی خاص حصے کی موت واقع ہوجاتی ہے۔ اس کی بنیادی طورپرتین اقسام ہیں

خشک گینگرین

 ٭یہ زیادہ ترصورتوں میں جسم کے ایک حصے تک محدود رہتی ہے۔

٭یہ بالعموم ہاتھوں اورپاؤں کو متاثرکرتی ہے اورذیابیطس اورآٹوامیون بیماریوں کے مریضوں میں زیادہ پائی جاتی ہے۔

٭اس میں جسم کا متاثرہ حصہ خشک ہوجاتا اورجلد کا رنگ بھورے سے ارغوانی نیلا اورپھرکالا ہوجاتا ہے۔ پھریہ خودہی مرجھا کر جسم سے الگ ہوجاتا ہے۔

٭اس کی بروقت تشخیص، علاج اورضروری احتیاط نہ کی جائے تویہ ترگینگرین کی شکل اختیارکرسکتا ہے۔

تر گینگرین

٭اس قسم میں ہمیشہ انفیکشن موجود ہوتا ہے جس کی وجہ سے اسے ترگنگرین کہا جاتا ہے۔

اس کی عام وجہ جسم کے کسی حصے کا شدید چوٹ کے باعث دب یا کچلا جانا ہے جس کے باعث اس حصے تک خون کی ترسیل مکمل یاجزوی طورپربند ہوجاتی ہے۔ نتیجتاً اس میں انفیکشن ہوجاتا یا اس کی موت واقع ہو جاتی ہے۔

٭اس کا فوری طورپرعلاج نہ کیا جائے توانفیکشن 48 سے72 گھنٹے میں پورے جسم میں پھیل جاتا ہے۔ ایسی صورت حال جان لیوا بھی ثابت ہوسکتی ہے۔

٭اس کی ذیلی اقسام میں اندرونی اعضاء کا گینگرین اورگیس گینگرین شامل ہیں۔

فارنیئر گینگرین

 ٭یہ قسم اعضائے تناسل میں انفیکشن ہونے کی وجہ سے ہوتی ہے۔

٭یہ خواتین کی نسبت مردوں میں زیادہ پائی جاتی ہے۔

٭اگریہ انفیکشن خون میں شامل ہوجائے تو کافی حد تک جان لیوا ثابت ہوسکتا ہے۔

Types of gangrene, dry gangrene, wet gangrene, Fournier gangrene

0 0 vote
Article Rating
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments
0
Would love your thoughts, please comment.x
()
x