زچگی کے بعد کتنا آرام کریں

ڈلیوری کے بعد خواتین کو جسمانی اور ذہنی طور پر نارمل ہونے کے لئے کچھ وقت درکار ہوتا ہے۔ ڈلیوری کن کن طریقوں سے ہوتی ہے اور خواتین کس قسم کی ڈلیوری کے بعد کتنا آرام کریں، آئیے جانتے ہیں۔

نارمل ڈلیوری

کسی پیچیدگی یا آپریشن کے بغیر زچگی نارمل ڈلیوری کہلاتی ہے۔ اس کے بعد خواتین کو چاہئے کہ کم از کم ایک ہفتے تک خوراک اور آرام کا ویسے ہی خیال رکھیں جیسے حمل کے دوران رکھتی تھیں۔ اس کے بعد کام کاج شروع کردیں۔

چھوٹا آپریشن

دوران زچگی بچے کے باہر آنے کی جگہ تنگ ہو اور پیدائش میں مشکلات پیش آرہی ہوں تو چھوٹا سا چیرا دے کر اس عمل کو آسان بنایا جاتا ہے۔ زچگی کے بعد وہاں جلد میں جذب ہونے والے ٹانکے لگا دیئے جاتے ہیں۔ یہ عمل چھوٹا آپریشن (episiotomy)کہلاتا ہے۔ اس کے بعدکم از کم 10 دن تک آرام کریں اور اپنی خوراک کا خیال رکھیں۔

آپریشن کے بعد 24 گھنٹوں کے دوران زخم والی جگہ پر برف کی تھیلی سے نرمی سے ٹکور کریں۔ اس سے تکلیف کم ہوگی اور سوجن سے بچنے میں مدد ملے گی۔ اس کے علاوہ آپریشن کے 24 گھنٹوں بعد نیم گرم پانی سے نہائیں۔

ٹھنڈے یا گرم پانی (جس میں بھی پرسکون محسوس کرتی ہوں) کے ٹب میں پانچ منٹ کے لئے بیٹھنے سے بھی درد کم ہوگا۔ اس کے بعد متعلقہ حصے کو مکمل طور پر خشک کر لیں۔

آلے کی مدد سے پیدائش

ڈلیوری کی اس قسم(forcep) میں سلاد نکالنے والے چمچ نما آلے کی مدد سے بچے کے سر کو برتھ کینال سے باہر نکالا جاتا ہے۔ یہ آپشن تب استعمال ہوتا ہے جب بچہ تمام کاوشوں کے باوجود قدرتی طور پر باہر نہ نکل پا رہا ہو۔

 اس کے بعد آرام کے دورانیے کا فیصلہ ماں کو جسمانی طور پر پہنچنے والے نقصان کے مطابق کیا جاتا ہے۔ عمومی طور پر ماؤں کو کم ازکم تین ہفتے آرام کرنا چاہئے اور اہل خانہ کو ان کی دیکھ بھال کرنی چاہئے۔

بڑا آپریشن

بڑے آپریشن یا سی سیکشن میں ماں کے پیٹ کو چیرا دے کر بچے کو باہرنکالا جاتا ہے۔ یہ ایک سے زائد حمل یا آنول میں مسائل وغیرہ کی صورت میں کیا جاتا ہے۔ اس کے بعد ماؤں کو چاہئے کہ کم از کم چھ ہفتوں تک آرام کریں۔

دیگراحتیاطیں

٭اگر ادویات تجویز کی گئی ہوں تو انہیں باقاعدگی سے مقررہ مدت تک استعمال کریں۔

٭بیرونی تولیدی عضو پر کٹ لگا ہو تو پیشاب کے بعد اسے دھونے کے بجائے اس پر نیم گرم پانی سے سپرے کریں۔ پھر جراثیم سے پاک تولیے یا نم ٹشو سے اسے صاف کرلیں۔

٭آپریشن کی صورت میں بچے کے وزن سے زیادہ بھاری چیزیں اٹھانے سے گریز کریں۔

٭اپنی اور بچے کی ضرورت کی تمام اشیاء اپنے پاس رکھیں تاکہ انہیں اٹھانے کے لئے باربارحرکت نہ کرنا پڑے۔

٭ اہل خانہ بالخصوص شوہر کو چاہئے کہ اہلیہ کی دیکھ بھال کرے اور اسے سہارا دے۔

آرام کرنے سے یہ مراد ہرگز نہیں کہ ہر وقت بستر پر پڑی رہیں اور کسی قسم کی حرکت نہ کریں۔ اپنے یا بچے کے چھوٹے موٹے کام کئے جا سکتے ہیں تاہم سخت جسمانی سرگرمیوں سے پرہیزکرنا ضروری ہے ۔

post delivery rest, rest after c-section, rest after normal delivery, delivery k bad kitna araam zaroori hai، postpartum care, caring for your health after childbirth, recovering from delivery

Vinkmag ad

Read Previous

بے قابو اجنبی ہاتھ

Read Next

برین اینیوریزم کیا ہے

Leave a Reply

Most Popular