اپنے تصورات درست کیجئے

129

دودھ ‘ ہرصورت مفید
دودھ میں کیلشیم موجود ہوتا ہے جو ہڈیوں اور دانتوں کی نشوونما اور مضبوطی کے لئے ضروری ہے ۔ہڈیوں کی نشوونماکا آغازابتدائی عمر میں ہو جاتا ہے جو جوانی تک جاری رہتا ہے۔جس طرح کہا جاتا ہے کہ کسی بھی چیز کی زیادتی نقصان دہ ہے‘ اسی طرح زیادہ دودھ پینے سے جسم میں کیلشیم کی سطح میں اضافہ جبکہ آئرن کی کمی واقع ہوجاتی ہے جو بہت سی بیماریوں کی وجہ بنتی ہے۔اس لئے مناسب مقدار میں ہی دودھ پینا چاہئے ۔ مزیدبرآں بالائی والے دودھ کے زیادہ استعمال سے برے کولیسٹرول میں اضافہ ہوتا ہے جو دل کی بیماریوں کی بڑی وجہ ہے۔اس لئے بالائی اُترا دودھ استعمال کرنا بہتر ہے۔
ڈاکٹر عرفان مسعود د،ماہر امراض ہڈی وجوڑ،اسلام آباد

زیادہ شیمپوکرنا کرے بالوں کو خراب
بالوں کی صحت کا بنیادی طور پر تعلق متوازن غذا سے ہے۔جن افراد کے بال چکنے (آئلی )ہوں‘ وہ روزانہ شیمپو استعمال کر سکتے ہیں۔کچھ لوگوں کے بال زیادہ شیمپو کرنے سے خراب ہوجاتے ہیں۔ انہیں چاہئے کہ بے بی شیمپو استعمال کریں اوراس کے ساتھ کنڈیشنربھی لگائیں۔بالوں کی صفائی کا خیال رکھتے ہوئے ہفتے میں دو سے تین بار شیمپو کیا جاسکتا ہے۔
ڈاکٹر اعجاز حسین،ماہرِامراض جلد،رحیم یار خان

چشمہ لگانا اور نظرکی کمزوری
یہ محض ایک مفروضہ ہے کہ باقاعدگی سے عینک استعمال کرنے سے نظر مزید کمزور نہیں ہوتی۔تاہم اس کاہرگز یہ مطلب نہیں کہ چشمہ نہ لگایا جائے۔ اسے لگائیں ضرور تاکہ دیکھنے میں دقت نہ ہو۔
ڈاکٹر ناصراشرف،ماہرِامراض چشم،کراچی

بریسٹ فیڈنگ‘ مانع حمل
اکثر خواتین اسے منع حمل کا قابل اعتبار طریقہ سمجھتی ہیں لیکن عملاً ایسا بہت ہی کم ہوتا ہے ۔ خصوصا ًزچگی کے بعد پہلے چھے مہینوں کے دوران خواتین اس پرزیادہ انحصار کرتی ہیں۔ اگر وہ وقفہ دینا چاہتی ہیں تواس پر انحصار کی بجائے ماہر امراضِ زچہ وبچہ سے مل کرکوئی قابل اعتماد طریقہ اختیار کریں ۔
(ڈاکٹر نابعہ طارق، ماہرامراض نسواں، شفا انٹرنیشنل ہسپتال اسلام آباد)

Leave a Reply

avatar
  Subscribe  
Notify of