حمل میں متلی سے بچاﺅ

610

    ماں بننا شادی شدہ خواتین کے لئے زندگی کا بہت ہی خوش کن اورخوبصورت احساس ہوتاہے۔ یہی وجہ ہے کہ جب پریگنینسی ٹیسٹ کا رزلٹ پازیٹو آتا ہے تو اس کی خوشی چھپائے نہیں چھپتی۔ تاہم خوشی کا یہ احساس اپنے ساتھ کچھ جسمانی اور نفسیاتی تبدیلیاں بھی لاتا ہے ۔ مثال کے طور پرخواتین کو حمل کے ابتدائی دنوں میں اکثرقے ¾ ابکائی اور متلی کی شکایت ہوتی ہے۔ ایسا جسم میں ہارمونز کی تبدیلی کی وجہ سے ہوتا ہے۔

یہ شکایت بالعموم حمل کے ابتدائی دنوں میں زیادہ ہوتی ہے تاہم کچھ خواتین میں یہ حمل کے سارے عرصے میں برقرار رہتی ہے۔ اس کے باعث انہیں معمول کے کاموں میں بھی دقت کا سامنا رہتا ہے زیادہ تر متلی اور قے صبح کے وقت ہوتی ہے تاہم یہ دن میں کسی بھی وقت ہو سکتی ہے۔ اس شکایت سے نپٹنے کے لئے خواتین مختلف ٹوٹکوں کا سہارا لیتی ہیں۔مثال کے طور پر بعض خواتین نمک کا تو بعض کھٹی چیزوںجیسے اچار اور املی وغیرہ کا استعمال کرتی نظرآتی ہیں۔ ان سے وقتی طور پر حالت بہتر ہو جاتی ہے۔

اس کے علاوہ ایک اور مسئلہ یہ بھی دیکھنے میں آیا ہے کہ انہیں مخصوص خوشبوئیں اور کھانے برے لگنے لگتے ہیں اور ان سے بھی انہیں متلی اور قے ہونے لگتی ہے۔ ایسی صورت میں بہتر یہی ہے کہ وہ ایسی خوشبوﺅں کو اپنے اردگرد سے ہٹا دیں ۔ مزید برآں ان جسمانی تبدیلیوں سے پیدا ہونے والی تکالیف سے بچنے کے لئے ماہر امرض زچہ و بچہ سے مکمل رابطے میں رہیں۔ حمل کے دوران اس عمومی شکایت اور اس کے تدارک کے لئے درج ذیل ہدایات پر عمل کریں:

ادویات کا استعمال
حمل کے ابتدائی تین ماہ تک فولک ایسڈ استعمال کریںبلکہ بہتر یہ ہے کہ اسے حمل ٹھہرنے سے پہلے ہی استعمال کرنا شروع کردیں۔ اس کے استعمال سے وہ بہت سی پیچیدگیوں سے محفوظ رہیں گی ہیں۔معدے کی جلن ¾ قے اور متلی سے بچنے کیلئے کچھ ادویات بھی موجود ہیں‘ تاہم انہیں اپنے معالج کے مشورے سے ہی استعمال کریں۔

مناسب خوراک استعمال کریں
دوران حمل کھانے میں احتیاط کرنی چاہئے۔ ایک ہی وقت میں پیٹ بھر کر کھانا کھانے کی بجائے کم مقدار میں اور تھوڑے تھوڑے وقفے سے کھائیں۔کوشش کریں کہ ایسی غذا کھائیں جو جلد ہضم ہونے والی ہو اور ایسی خوراک سے پرہیز کریں جس سے بدہضمی کا اندیشہ ہو۔ تیز مصالحہ دار اور چٹ پٹی چیزیں ہر گز استعمال نہ کریں‘ اس لئے کہ ان سے معدے میں تیزابیت پیدا ہوتی ہے جس کے باعث قے اور متلی ہو سکتی ہے۔
اسی طرح کیفین اور کولامشروبات کے استعمال سے بھی گریز کریں۔ بہتر یہی ہے کہ زیادہ مقدار میں پانی پئیں‘ تازہ پھل کھائیں یا ان کا جوس بنا کرپئیں۔ پانی‘ کھانے کے دوران پینے کی بجائے اس سے کم از کم ایک گھنٹہ پہلے پئیں۔
اگر صبح کے وقت ابکائی اور قے آتی ہو تو تھوڑی مقدار میں معیاری میٹھے بسکٹ استعمال کر سکتی ہیں۔ بازار میں ایسے بسکٹ بھی دستیاب ہیں جن میں ادرک اور زیرہ موجود ہوتا ہے۔ یہ بھی قے اور متلی میں مفید ہیں۔ اس کے علاوہ ادرک اور لیموں کی چائے پینے سے بھی آپ بہتر محسوس کریں گی۔

اپنے آرام کا خیال رکھیں
حمل کے دوران ایسے سخت کام نہ کریں جن سے آپ تھک جائیں۔ جب بھی تھکاوٹ محسوس ہو‘ تھوڑی دیر کے لئے لیٹ جائیں۔ اسی طرح دوپہر کے کھانے کے بعد تھوڑی دیرکے لئے سونا بہتر ہے۔ رات کے دوران بھرپور نیند کریں۔ اگر رات کے وقت آپ کو صحیح نیند نہیں آتی تو اپنے معالج سے مشورہ کریں۔

ورزش کریں
حاملہ خواتین کیلئے ورزشیں بہت مفید ثابت ہوتی ہیں۔ تازہ ہوا میں صبح کی سیر کریں دوپہر اور رات کے کھانے کے بعد چہل قدمی ضرور کریں۔ ان کے علاوہ اگر ورزشیںکرنا ہوں تو وہ اپنے معالج کے مشورہ سے کریں۔

مزید پڑھیں/ Read More

متعلقہ اشاعت/ Related Posts

بچے کی پیدائش کے بعد کچھ عرصے کے لئے وقفہ نہ صرف ماں کی ص

    رحم مادر میں بچہ نشو و نما کے مختلف مراحل سے گزرتا ہ

Child Delivery

بچے کی پیدائش قدرت کے کرشموں میں سے ایک ہے۔ یہ ثابت شدہ