جسمانی سرگرمیاں‘ اشدضروری

4

جسمانی سرگرمیاں‘ اشدضروری

سائوتھ ایشین یونیورسٹی لاہورکے اسسٹنٹ پروفیسر فزیوتھیراپی ڈاکٹرو سیم جاوید کا کہناہے کہ انسانوں میں زیادہ تر بیماریاں غیرمتحرک زندگی اور بیٹھے رہنے کی عادت سے آتی ہیں لہٰذا ان سے بچائو کے لئے ہمیں ورزش کو معمول بنانا چاہئے۔ ان کے مطابق ورز ش ایسی حرکت کو کہا جاتا ہے جس میں آپ کے مختلف عضلات خاص انداز میں کام کرتے ہیں اور جسم کی کیلوری کو جلنے کا موقع ملتا ہے۔

آغا خان یونیورسٹی ہسپتال کراچی کے کنسلٹنٹ فزیو تھیراپسٹ محبت علی کا کہنا ہے کہ جسمانی تندرستی کے لئے ورزشوں کی ضرورت ہوتی ہے جنہیں دو حصوں میں تقسیم کیا جا سکتا ہے۔پہلی وہ جو عمومی صحت کے لئے ضروری ہیں جبکہ دوسری کا تعلق مخصوص مہارتوں سے ہوتا ہے:
’’عمومی تندرستی سے مراد ایسی کیفیت ہے جس میں عام آدمی خود کو بہتر‘ صحت مند اور چاق چوبند محسوس کرے ۔اس کے لئے اوسط درجے کی ورزشیں درکارہوتی ہیں۔ اس کے برعکس اگر آپ کوباڈی بلڈنگ کرنا ہو یا کشتی‘ کبڈی‘ فٹ بال‘ سکوائش یا بیڈمنٹن کھیلنا ہو تو اس کے لئے فٹنس کی الگ سطح درکارہوتی ہے اور اس کے لئے ورزشیں بھی سخت ہوتی ہیں۔‘‘
ماہرین صحت کا کہنا ہے کہ ایک عام آدمی کے لئے ضروری ہے کہ وہ روزانہ کم از کم 10000قدم پیدل چلے۔ ہم روزمرہ کے کام کاج میں اتنا پیدل نہیں چلتے‘ اس لئے وہ یہ تجویز کرتے ہیں کہ ہر شخص کو ہفتے میں کم از کم پانچ دن روزانہ 30منٹ تک ضرور تیزتیزپیدل چلنا چاہئے۔ اس میں مر اورد عورت‘ جوان اور بزرگ سمیت کسی کو استثنیٰ حاصل نہیں۔

0 0 vote
Article Rating
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments
0
Would love your thoughts, please comment.x
()
x