ہارمونز کے مسائل

0

ہارمونز کے مسائل

ہارمونز سے متعلق چند مسائل اور ان سے محفوظ رہنے کے کچھ آسان طریقے مندرجہ ذیل ہیں

ہارمونز اور موٹاپا

ہماری صحت سے متعلق بہت سے مسائل بعض اوقات ہارمونزسے جڑے ہوتے ہیں۔ بعض اوقات اس پہلو کو دیکھے بغیر انہیں دیگر عوامل سے وابستہ سمجھ لیا جاتا ہے۔ ان میں سے ایک موٹاپا بھی ہے۔ ایڈرینل گلینڈ کارٹی سول ہارمون خارج کرتا ہے جو دو اہم ہارمونز گریلن اور لیپٹِن کو متاثر کرتا ہے۔ گریلن رطوبت ہمارے معدے اور چھوٹی آنت پر اثر انداز ہوتی اور بھوک کو کنٹرول کرتی ہے۔ دوسری طرف لیپٹِن ہارمون جسم کو بتاتا ہے کہ اب مزید کھانے کی ضرورت نہیں لہٰذا فرد کھانے سے ہاتھ روک لیتا ہے۔ یوں لیپٹن کی کمی اور گریلن کی زیادتی موٹاپے کا باعث بنتی ہے۔ جب گریلن کا لیول بڑھتا ہے تو کھانے کی خواہش بھی بڑھتی ہے۔ اگریہ ہارمون لگاتار بڑھتا رہے تو آپ کو بھوک زیادہ لگے گی اورآپ پیٹو ہوجائیں گے۔ اسی طرح لیپٹن کی کمی بھی موٹاپے کی وجہ بنتی ہے۔

چہرے پر بال آنا

خواتین کے چہروں پر بال آجانے کو بھی جلد کے ایک مسئلے کے طور پر جانا جاتا ہے۔ اکثر صورتوں میں اس کا تعلق ہارمونز کے ساتھ ہوتاہے اوراس وقت سامنے آتا ہے جب جسم میں مردانہ ہارمون زیادہ پیدا ہو رہا ہو۔ علاج سے اس ہارمون کو غیرمتحرک کیا جا سکتا ہے جس سے مسئلہ حل ہو جاتا ہے۔ خواتین چہرے کے بالوں کے لئے لیزرٹریٹمنٹ کی طرف رُخ کرتی ہیں حالانکہ جب تک ہارمونز کا مسئلہ حل نہیں ہو گا تب تک لیزر سے علاج کے باوجود بال باربار آتے رہیں گے۔

 hormonal issues, hair on skin, obesity

0 0 vote
Article Rating
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments
0
Would love your thoughts, please comment.x
()
x