ہیضہ

1

ہیضہ

ہیضہ عام طور پرآلودہ پانی پینے اور ایسی غذا کھانے سے ہوتا ہے۔ یہ بعض اوقات وباء کی صورت میں پھیل جاتا ہے۔ برسات کے موسم میں مکھیوں اور مچھروں کی تعداد میں کئی گنا اضافہ ہو جاتا ہےجوہیضے کے پھیلائو کا ایک سبب بھی ہے۔

ہیضہ میں مریض کو پے در پے قے اور اسہال آتے ہیں جس سے جسم میں پانی کی کمی ہوجاتی ہے۔ اگر یہ سلسلہ چلتا رہے تو فرد قریب  المرگ ہو جاتا ہے۔

بچاؤ کی تدابیر

٭برسات شروع ہوتے ہی پانی کی ٹینکی میں پانی صاف کرنے کے لئے پوٹاشیم پرمیگنیٹ ڈال دی جائےیا پانی ابال کر ‘ٹھنڈا کر کے پئیں۔

٭ہمیشہ تازہ کھانا کھائیں اورگلی سڑی چیزوں سے پرہیز کریں۔

٭کھانے پینے کی چیزیں ڈھانپ کر رکھیں۔

٭بازاری کھانوں سے پرہیز کریں۔

٭کھانے کے برتن گرم پانی سے دھو کر استعمال کریں۔

٭بدہضمی نہ ہونے دیں۔ ہلکی اور زودہضم غذا کھائیں۔

٭برسات میں اپنی غذا میں پودینہ‘ سرکہ‘ پیاز اور لیموں ضرور شامل کریں۔

٭موسمی سبزیاں مثلاً کدو‘ ٹینڈے‘ توری کھائیں۔ اس کے علاوہ آم‘ خوبانی‘ آڑو‘ آلو بخارے جیسے پھل کھائیں تاکہ جسم کو غذائیت بھی حاصل ہو اور نظامِ ہضم پر بوجھ بھی نہ پڑے۔

٭پیاس بجھانے کے لئے برف کو پانی میں ڈال کر پینا مفید نہیں۔ اس سے زیادہ بہترہے کہ فریج میں پانی کی بوتل بھر کر رکھ دیں اور ٹھنڈا ہونے پر پئیں۔ برف کا زیادہ استعمال معدے اور جگر کو نقصان پہنچاتا ہے۔

٭چائے کافی کا استعمال کم سے کم کریں۔

٭غذا کے دوران ٹھنڈا پانی پینے سے ہاضم رطوبت (گیسٹرک انزائم) پتلی ہو جاتی ہے جس کے باعث غذا دیر سے ہضم ہوتی ہے۔ اس لئے کھانے کے دوران ٹھنڈا پانی پینے سے حتیٰ الامکان پرہیز کریں۔

Cholera, how to prevent it, clean water, food

0 0 vote
Article Rating
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments
0
Would love your thoughts, please comment.x
()
x