جوسٹین گارڈر ’’سوفی کی دْنیا‘‘ ناروے سے تعلق رکھنے والے ناول نگار جوسٹین گارڈر (Jostein Gaarder)کے ایک شہرہ آفاق ناول’’ Sofies Verden‘‘کا اردو ترجمہ ہے جسے ہماری قومی زبان کے قالب میں شاہد حمید

عید کتنے ترسے ہوئے ہیں عیدوں کو وہ جو عیدوں کی بات کرتے ہیں شاعر: نامعلوم، انتخاب:صبیحہ خانم، پشاور ایک شہر میں دو دو عیدیں دیکھ کے ہنستا ہو گا چاند شاعر: نامعلوم، انتخاب: تبسم چوہدری‘

بچپن ممکن ہے ہمیں گاؤں بھی پہچان نہ پائے بچپن میں ہی ہم گھر سے کمانے نکل آئے شاعر:منور رانا، انتخاب:تنویراختر‘ پشاور وہ گلیاں جن سے وابستہ ہیں یادیں میرے بچپن کی میرے بھوکے قدم اب ان ک

اس ماہ کاموضوع صبح طلوع صبح کا منظر عجیب ہے کتنا مرا خیال ہے میں پہلی بار جاگا ہوں راج نرائن راز ؔ طلوع صبح پہ ہوتی ہے اور بھی نمناک وہ آنکھ جس کی ستاروں سے دوستی ہو جائے قابل اجمیری د

حسین چہرے کی تابندگی مبارک ہو تجھے یہ سالگرہ کی خوشی مبارک ہو شاعر: نامعلوم، انتخاب:خرم شہزاد‘ اٹک موتیا‘ بیلا‘ پھول‘ کلیاں‘ دیکھو یارو شاد ہیں ناں آج تمہاری سالگرہ ہے‘ دیکھو ہم کو

گدھے کی انسانی خصوصیات سابق پریذیڈنٹ کارٹر کی ڈیموکریٹک پارٹی کا نشان گدھا تھا بلکہ ہمیشہ سے رہا ہے۔ پارٹی پرچم پر بھی یہی بنا ہوتا ہے۔اس پرچم تلے پوری امریکی قوم ایران کے خلاف سیسہ پلائی