کیس سٹڈی

بعض بیماریاں ایسی خاموشی سے انسانوں پر حملہ آور ہوتی ہیں کہ ان کے لاحق ہوجانے کی ہلکی سی بھنک بھی نہیں پڑتی اوروہ اندر ہی اندر پھیل کر بظاہر بالکل صحت مند شخص کو کھوکھلا کر دیتی ہیں اور بسا

”مو’یٰ کیپیدائ“ کے بعدجب میں نے پہلی دفعہ ا’ے دیکھا تو مجھے ایک دھچکا ’ا لگا۔ میرے باقی دونوں بچے بالکل نارمل ہیں لیکن ا’ کا ہونٹ اور تالو کٹے ہوئے تھے۔ میرے لئے یہ

وہ اپنے من میں بہت سے خواب لئے سعودی عرب میں مزدوری کر رہاتھاکہ اسے کسی خطرناک بیماری نے آن گھیرا۔ اس کی وجہ سے اسے وہاں کی ملازمت سے فارغ کر دیاگیا ۔ اسے اپنے کام کے حرج ہونے کا افسوس تھا‘ ا

Children are the precious thing on the face of earth. They light up the eyes of their parents and give them hope and power to do anything in the world. But when they get seriously ill, the life of parents becomes miserable. Arham Saqib was also such child whose illness made his parents feel dejected and helpless. He was born in October 20

کبھی کبھار ایسا بھی ہوتا ہے کہ انسان کے پاس اچھی خوراک موجود ہوتی ہے لیکن وہ اس کو کھا نہیں سکتا۔ کچھ ایسا ہی روالپنڈی کے رہائشی راشد مسیح کے ساتھ ہورہا تھا۔اس 38 سالہ جوان کوپچھلے چار سال سے

Life is beautiful if you are healthy and have adequate resources for living. But when there is some problem in the body, life gets out of track and things become dull and unexciting. And when you have to take medicines regularly, it makes things all the more miserable. 33-year-old Khawaja Abdul Basit, a resident of Rawalpindi, faced multi