کورسٹوری

’’پھولے نہ سمانا‘‘ اردو کا ایک محاورہ ہے جس کا مطلب کسی فرد کا خوشی کی وجہ سے اتنا پھول جانا ہے کہ اس کے لئے اپنے لباس میں سمانا مشکل ہو جائے۔کہا جاتا ہے کہ عورت کو زندگی کی سب سے بڑی خوشی

کہتے ہیں کہ مصیبت میں گھبراہٹ اسے ختم نہیں کرتی بلکہ اس میں اضافے کا موجب بنتی ہے ۔دوسری طرف اگراس کا سامنا مثبت سوچ‘حوصلے اور تدبرسے کیا جا ئے تو اکثر صورتوں میں اس سے چھٹکارا پایا جا سکتا

صبح سویرے اٹھ کرسیر کو جانا ایک خوبصورت اور پرلطف تجربہ تو ہے مگر اس کے لئے نیند کی تھوڑی سی قربانی دینا پڑتی ہے۔اس کے بدلے میں وہ آپ کو نہ صرف تازہ دم کرتی اورصحت بخشتی ہے بلکہ آپ کو ذہنی

’’بخار‘‘ان چند طبی مسائل میں سے ایک ہے جن کی وجہ سے لوگوں کی بہت بڑی تعداد ڈاکٹر وںکے پاس جاتی ہے یا پھر خود ہی اپنا علاج کرنا شروع کر دیتی ہے ۔ایک اور دلچسپ حقیقت یہ ہے کہ دنیا بھر میں اگر

عید الاضحیٰ وہ تہوار ہے جس پر ہر خاص و عام کو کھانے کے لئے اچھا خاصا گوشت میسرہوتا ہے۔اس موقع پرکسی کو گوشت کھانے سے منع کرنا رنگ میں بھنگ ڈالنے کے مترادف ہے ۔بنیادی بات یہ ہے کہ کچھ مخصوص بی

    انسانی جسم کو اگر گاڑی سے تشبیہ دی جائے تو اس میں خون کی حیثیت وہی ہے جو گاڑی میں ایندھن کی ہوتی ہے ۔جس طرح قیمتی سے قیمتی گاڑی اس کے بغیر ایک قدم نہیں چل سکتی ہو‘اسی طرح خون کے بغیر انسا