پودے اور صحت

انسان اس کائنات کی سب سے ذہین مخلوق ہے جسے دیگر تمام مخلوقات کے مقابلے میں سوچنے سمجھنے اور اپنے اردگرد کی چیزوں اور معاملات پر غوروفکر کرنے کی زیادہ صلاحیتوں سے نوازاہے۔اس نے اپنی اسی صل

جس ماحول میں پودوں کی کثرت ہو‘ وہاں کی فضا آلودگی سے پاک ‘صاف ستھری اور آکسیجن سے بھرپورہوتی ہے۔یوں یہ نہ صرف ماحول کو خوبصورت بناتے ہیں بلکہ ذہنی اور جسمانی صحت پر بھی اچھے اثرات مرتب

فریحہ فضل پام منٹگمری(Pam Montgomery) دو مشہور کتب ''Partner Earth: A Spiritual Ecology'' اور ''Plant Spirit Healing: A Guide to Working with Plant Consciousness''کی مصنفہ ہیں۔ان کا کہناہے کہ پودے ہمارے اولین استاد ہیںجن کے ساتھ ابلاغ ہمیں صح

درخت اور انسان کا تعلق بہت پرانا اور ابدی ہے۔ابتدائی زمانے کا انسان اس کے پتوں سے اپنا تن ڈھانپتا‘ اس کے پھل کھاتا اور اسی کی مدد سے اپنی بیماری کا علاج بھی کرتا تھا۔کئی درختوں کی چھال اور

مالک دوجہاں نے انسانوں کو بے شمار نعمتوں سے نوازا ہے جن کا جتنا شکر ادا کیاجائے، کم ہے ۔ ان میں سے کچھ تو ہمیں بالکل مفت میسر ہیں اورکچھ اپنے فوائد کے مقابلے میں اتنی ارزاں ہیں کہ انہیں مفت

ہر ثقافت کے اپنے مصالحے اور جڑی بوٹیاں ہوتی ہیں جو غذائی اعتبار سے کسی’’ پاور ہاؤس‘‘ سے کم نہیں ہوتیں۔ پاک و ہند کے پکوانوں میں ہلدی عموماً ہر کھانے میں کہیں ذائقہ بڑھانے اور کہیں رنگ نک