خون کا سرطان:علاج کے امکانات

4

خون کا سرطان:علاج کے امکانات


بلڈکینسر کے علاج کی کامیابی کا انحصار مریض کی صحت‘ عمر اور کینسر کی قسم پر ہوتا ہے۔ اس کی کچھ اقسام کا علاج مشکل ہوتا ہے جبکہ کچھ مریضوں کا علاج وقتی طور پرآسانی سے ہو سکتاہے ۔ وقتی طور پر علاج کا مطلب یہ ہے کہ مریض کے متاثرہ خلیوں کو طویل عرصے تک غیر موثر کر دیا جائے ۔ ایسا کرنے سے مرض ختم تو نہیں ہوتا لیکن وہ مریض کے لئے پریشانی کا باعث بھی نہیں بنتا۔

گودے کی پیوندکاری

اس مرض کا مکمل علاج گودے کی پیوندکاری یعنی بون ٹرانسپلانٹ ہے تاہم اس پر چونکہ بہت زیادہ خرچ آتا ہے اس لئے بہت سے مریضوں کے لئے اس سے استفادہ ممکن نہیں ہوتا اور نہ ہی یہ سب مریضوں کے لئے مفید ہوتا ہے۔ بزرگوں کی نسبت نوجوانوں اور بچوں میں یہ زیادہ کامیاب ہے۔

کیموتھیراپی ضروری

کینسر کے علاج کے لئے کیموتھیراپی اور ریڈی ایشن وغیرہ سے بھی مدد لی جاتی ہے تاہم بلڈکینسر کا علاج زیادہ تر کیموتھیراپی سے ہی کیا جاتا ہے۔ اس میں ڈاکٹر کی کوشش ہوتی ہے کہ اگر کینسر زدہ خلیوں کو مکمل طور پر ختم کرنا ممکن نہ ہو تو کم از کم انہیں اس قدر غیر موثر کر دیا جائے کہ وہ طویل عرصے تک دوبارہ تیزی کے ساتھ نشو و نما نہ پا سکیں۔


امریکہ میں 1975ء میں خون کے سرطان کے شکار افراد کے پانچ سال تک زندہ رہنے والوں کی اوسط عمر 33.10 فی صد تھی جو جلد تشخیص اور ادویات میں بہتری کی وجہ سے 2009ء میں 62.9 فی صد ہو گئی۔

بلڈکینسر میں مبتلا مریض کے خون کے خلیے چونکہ صحیح طور پر نہیں بن رہے ہوتے لہٰذا اسے خون کے عطئے کی بار بار ضرورت پڑ سکتی ہے۔ کینسر کے ابتدائی مرحلے میں تشخیص اور جلد علاج کا فائدہ ضرور ہے تاہم اب بھی اس سرطان کی ابتدائی مرحلے میں پہچان بہت مشکل ہے۔

bone marrow transplant, chemotherapy, radiotherapy, blood cancer, blood donation 

 

0 0 vote
Article Rating
Subscribe
Notify of
guest
0 Comments
Inline Feedbacks
View all comments
0
Would love your thoughts, please comment.x
()
x