آدھے سر کے دردکا علاج

155

آپ نے اکثر دیکھا ہو گا کہ بعض لوگ آدھے سرکے درد ،دردِشقیقہ یامائیگرین (migraine)کی شکایت کرتے نظر آتے ہیں۔ یہ انتہائی تکلیف دہ صورتحال ہوتی ہے۔
طب یونانی میں جو تدابیر اس مرض سے نجات کے لئے کی جاسکتی ہیں وہ اکثر نہ صرف بے ضرر ہیں بلکہ ان کے مثبت نتائج مرتب ہوتے ہیں۔
٭ دردِ شقیقہ کے مریضوں کے لئے ضروری ہے کہ ناشتہ اور کھانا کھائے بغیر اپنی روزمرہ سرگرمیوں کاآغازنہ کریں اور صرف چائے یا کافی پر اِکتفاکبھی نہ کریں۔
٭ ایسی غذاو¿ں سے پرہیزکیا جائے جن میں امائینو ایسڈموجود ہو ۔یہ زیادہ ترگوشت، چیز، مونگ پھلی اور چاکلیٹ میں پایا جاتا ہے۔
٭ فیورفیو(Fever few)ایک پھول ہے جس میں ایسے عناصرپائے جاتے ہیںجودردِشقیقہ کے اثر ت اور دورانیے کو کم کرنے میں مدد یتے ہیں۔ اس کی پتیاں خشک کر کے پاﺅڈر بنا لیں یا قہوہ بنا کر پینے سے بھی آرام ملتا ہے۔
٭ روغن السی میں ضروری فیٹی ایسیڈ کی مقدار زیادہ ہوتی ہے۔ دن میں ایک سے دوچمچ اس قسم کے سردرد میں مفید رہتے ہیں۔
٭ آدھے سرکے درد کی ابتدا ہی میں اگر ایک سے دوگرام ادرک کا سفوف لے لیا جائے یا ایک چھوٹاٹکڑا ادرک چبا لیا جائے تو درد میں شدت نہیں آتی۔
٭ روزمیری (Rosemary)سدا بہار جڑی بوٹی ہے۔ اس کی چائے بھی مائیگرین کے لیے عمدہ علاج ہے۔
٭ جسم میں پانی کی کمی نہ ہونے دیں کیونکہ آدھے سر میں درد کاایک اہم سبب یہ بھی ہوسکتا ہے۔
٭ جنہیں یہ مسئلہ ہو وہ اگر زیادہ دیر تک کھانا نہ کھائیںتو بھی انہیں سر درد ہو سکتا ہے۔
٭ گرم گرم شیرے میں ڈوبی ہوئی جلیبیاں کھائی جائیں تو یہ بھی اکثر فائدہ مندثابت ہوتی ہیں۔
٭ کوشش کریںکہ کام اور مصروفیات کاکو ذہن پر زیادہ سوار نہ کریں۔ اس کے ساتھ ساتھ کم سے کم30منٹ تک چہل قدمی ضرور کریں۔ سائیکل چلانا ، تیراکی اور مختلف قسم کی ورزشوں کو معمولاتِ زندگی میں شامل کیا جائے کیونکہ یہ تمام طریقے ذہنی دباﺅ اوراضطراب سے نجات کے لیے بہت اہم ہیں۔
(ڈاکٹر طبیبہ تسنیم قریشی، فیکلٹی آف ایسٹرن میڈیسن، ہمدرد یونیورسٹی۔)

مزید پڑھیں/ Read More

متعلقہ اشاعت/ Related Posts

Leave a Reply

Leave a Reply

  Subscribe  
Notify of